اس عظیم الشان شہر میں درجنوں بڑی بڑی عمارتیں اور سڑکیں ہیں لیکن پورے شہر میں کوئی ایک بھی شخص نہیں رہتا، لیکن کیوں؟ جواب ایسا کہ کوئی آدمی تصور بھی نہیں کرسکتا

بیجنگ(مانیٹرنگ ڈیسک) چین میں سینکڑوں شہر ایسے ہیں جن کی آبادی ان کی گنجائش سے زیادہ ہو چکی ہے لیکن ملک میں کئی ایسے شہر بھی ہیں جو بالکل خالی پڑے ہیں اور ان میں ایک بھی شہری رہائش پذیر نہیں ہے حالانکہ ان غیرآباد شہروں میں بلندو بالا عمارات، شاپنگ مالز اور ہر طرح کی عظیم الشان عمارات موجود ہیں۔ ان شہروں کی حقیقت ایسی ہے کہ جان کر ہر کوئی چینی حکومت کی پیش بینی کی داد دے گا۔ دی انڈیپنڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ پورے کے پورے شہر دراصل نئے بنائے گئے ہیں جن میں چینی حکومت دیہاتوں میں بسنے والے شہریوں کو لا کر بسانا چاہتی ہے۔باقی دنیا میں تو ایک آبادی بنتی ہے۔ پھر وہ وقت کے ساتھ ساتھ پھیلتی ہوئی شہر کا روپ دھار لیتی ہے لیکن چینی حکومت نے اس کے برعکس ایک منصوبے کے تحت پہلے ہی سے یہ شہر بسا دیئے ہیں جن میں ہر طرح کی عمارات بنا دی گئی ہیں۔ اس منصوبے کے مطابق چینی حکومت 2026ءتک دیہات میں رہنے والے 25کروڑ شہریوں کو ان شہروں میں لا کر بسائے گی۔ فوٹوگرافر ’کئی گیمرر‘ نے چین کا سفر کیا اور ان مکمل غیرآباد شہروں کی کئی تصاویر بنا کر دنیا تک پہنچائی ہیں۔ گیمرر کا کہنا ہے کہ ”اتنے بڑے بڑے غیرآباد شہر انتہائی پراسرار لگتے ہیں جن میں آسمان کو چھوتی بلندوبالا عمارات اور ہر طرح کا عالی شان انفرانسٹرکچر تو موجود ہے لیکن ان میں ایک بھی انسان نہیں رہتا۔“